2020، وزیراعظم ہاؤس کا 280، آفس کا 334 ملین روپے خرچہ

وزیراعظم عمران خان کی حکومت میں کفایت شعاری مہم کے نتائج سامنے آنے کا سلسلہ جاری، وزیر اعظم کی کفایت شعاری مہم کے نتیجے میں مختلف اداروں اور گورنمنٹ ہاؤسز میں بڑے پیمانے پر بچت ہو رہی ہے۔

وزیر اعظم کی زیر صدارت ترجمانوں کے اجلاس میں آج وزیر اعظم ہاؤس کے اخراجات کی تفصیلات پیش کی گئیں، اجلاس میں بتایا گیا کہ وزیر اعظم آفس اور وزیر اعظم ہاؤس میں اخراجات کی مد میں کروڑوں روپے بچائے گئے ہیں، وزیر اعظم مشکل معاشی حالات میں اخراجات 49 فی صد تک کم کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

وزیر اعظم نے صوابدیدی اختیارات کے تحت نہ کوئی تحائف دیے نہ کیش ایوارڈز، اس وقت وزیر اعظم ہاؤس کے اخراجات 180 ملین روپے تک کم ہو چکے ہیں۔
2018 میں وزیر اعظم ہاؤس کے اخراجات 509 ملین، اور وزیر اعظم آفس کے 514 ملین روپے تھے، 2019 میں وزیر اعظم ہاؤس کے اخراجات میں 39 فی صد کمی سے اخراجات 339 ملین روپے رہے، جب کہ وزیر اعظم آفس کا خرچ 40 فی صد کمی سے 305 ملین روپے رہا۔
وزیر اعظم کو سابق سربراہان کے غیر ملکی دوروں پر اخراجات کی تفصیلات بھی پیش کی گئیں، بتایا گیا کہ یوسف رضا گیلانی نے 48 دورے کیے، جن پر قومی خزانے سے 572 ملین روپے خرچ کیے گئے۔

پرویز اشرف نے 9 دوروں میں 107 ملین اڑائے، نواز شریف نے 92 غیر ملکی دورے کیے اور 1 اعشاریہ 8 ارب روپے خرچ کیے، شاہد خاقان عباسی کے 19 دوروں پر 260 ملین روپے خرچ ہوئے۔

دوسری طرف وزیر اعظم عمران خان کے 26 غیرملکی دوروں میں 176 ملین روپے خرچ ہوئے، جبکہ وزیر اعظم نے کوئی کیمپ آفس نہ رکھ کر بھی کروڑوں روپے کی بچت کی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button