خیبر پختونخوا

سیکرٹری اطلاعات کا رائٹ ٹو انفارمیشن کمیشن کی کارکردگی پر اظہار اطمینان

سیکرٹری برائے حکومت خیبر پختونخواہ کے محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ ارشد خان نے جمعرات کے روز خیبر پختونخواہ انفارمیشن کمیشن کا دورہ کیا جہاں انہیں چیف انفارمیشن کمشنر ساجد خان جدون اور کمشنر II ریاض خان داؤد زئی نے بریفنگ دی۔

مسٹر ارشد خان کو کمیشن کے افعال، کارناموں اور دیگر اہم امور کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔ انہیں بتایا گیا کہ فی الحال کمیشن نے خیبر پختون خوا میں شفافیت اور قانون کے مناسب نفاذ کو یقینی بنانے، خدمات کی فراہمی کو بہتر بنانے، GIZ، ورلڈ بینک اور دیگر سماجی شعبے کی دیگر تنظیموں کے ساتھ مفاہمت نامے پر دستخط کیے ہیں۔ یہ پروگرام تعاون کے شعبوں میں مشاورتی خدمات مہیا کرتا ہے جس میں 15 اضلاع میں 400 پبلک انفارمیشن آفیسرز کی استعداد کار کو بڑھانے، الیکٹرانک فائلنگ سے متعلق درخواستوں، سات ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز کے سرکاری ملازمین، سول سوسائٹی آرگنائزیشنز، اکیڈمیا اور تھنک ٹینک کے میں آگاہی مہم چلانے اور COVID 19 کی مشکلات کے تناظر میں صوبائی اور مقامی انتظامیہ، میڈیا اور سول سوسائٹی کی بھی حمایت کرتا ہے۔

چیف کمشنر نے بتایا کہ کمیشن ورلڈ بینک کے اشتراک سے دستاویزی فلمیں اور ریڈیو سپاٹ تیار کرے گا اور نشر کرے گا اور عوام کو اس بہترین قانون سے متعلق فوائد کے بارے میں آگاہ کرنے کے لئے پرنٹ میڈیا میں اشتہارات شائع کرے گا۔
اس کے علاوہ سوات، ایبٹ آباد اور ڈی آئی خان میں تین اپیلٹ دفاتر / بنچ قائم کیے جائیں گے۔ یہ دفاتر پشاور کی بجائے شکایات کرنے والوں کو ان کی شکایات سننے میں مدد فراہم کریں گے۔

ارشد خان نے کمیشن کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ رائٹ ٹو انفارمیشن کمیشن حکومت اور عوام دونوں کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اس کو درپیش چیلنجوں کو دور کرنے کے لئے، تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جائیں گے، عوام کو بروقت معلومات کی فراہمی میں کمیشن کا کردار بہترین ہے۔

انہوں نے کورونا ایمرجنسی کے دوران کمیشن کی سرگرمیوں کو سراہا۔ اس موقع پر انہوں نے خیبر پختونخوا انفارمیشن کمیشن کے مختلف حصوں کا بھی دورہ کیا۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button