قبائلی اضلاع

جنو بی وزیرستان:پولیٹکل محررز کا احتجاج، دفتر میں توڑ پھوڑ، 15گرفتار

 پولیٹکل کمپاونڈ جنوبی وزیرستان ٹانک میں این ٹی ایس کے ذرئعے نئے پولیٹکل محررز کی بھرتیاں ہو رہی تھیں جس دوران عرصہ بیس سال سے خدمات سر انجام دینے والے مختلف پولیٹکل محررز نے مطالبہ کیا کہ این ٹی  ایس ٹیسٹ پر بھرتیوں سے پہلے اے ڈی ایف  فنڈ کے تحت کام کرنے والے پولیٹکل محررز کو مستقل کیا جائے بصورت دیگر تمام پولیٹکل محررز این ٹی ایس کے تحت بھرتی ہونے والے محررز کو کسی صورت تسلیم نہیں کریں گے اور اپنے حقوق کی حصول کے لئے ہر سطح پر اجتجاج کریں گے ۔

اس دوران پولیٹکل محررز کا مطالبہ تھا کہ پولیٹکل ایجنٹ جنوبی وزیرستان اس مسلے کو خود حل کرے مگر اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ کی نااہلی اور لاپرواہی کی وجہ سے محررز کو پولیٹکل ایجنٹ کے دفتر جانے سے روک دیا جس پر انہوں نے پولیٹکل ایجنٹ کے دفتر پر دھاوا بول دیا اور مختلف دفاتر کے دروازے اور کھڑکیاں توڑ ڈالیں اور اسی اثناء مشتعل مظاہرین نے راشن اسسٹنٹ طفیل ارائیں کے دفتر پر دھاوا بول کر ان کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا جس کے بعد انتظامیہ حرکت میں آگئی اور اجتجاج کرنے والے 15 پولیٹکل محررز کو گرفتار کر لیا۔ اس موقع پر ایک پولیٹکل محرر نے ٹی این این  کو بتایا کہ دو درجن کے قریب مقامی پولیٹیکل محررز پچھلے دس سے بیس سالوں تک ڈیوٹیاں سر انجام دے رہے ہیں مگر افسوس کہ جنوبی وزیرستان کے مقامی پولیٹکل محررز کی بجائے انتظامیہ نے غیر مقامی لوگوں کو مستقل بھرتی کیا ہے اور اب ہم اوور ایج ہوئے ہیں لہذا پولیٹکل انتظامیہ کو چاہیے کہ ان غیر مستقل محررز کو یا تو مستقبل کیا جائے یا لیویز فورس میں بھرتی کیا
جائے۔اس حوالے سے جب پولیٹکل انتظامیہ کا موقف لینے کی کوشش کی گی تو اپریٹر کامران نے کہا کے انتظامیہ کا کوئی افسر موقع پرجود نہیں۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button