قبائلی اضلاع

جرگے نے خیبر ایجنسی میں سوسالہ دیرینہ دشمنی دوستی میں بدل دی

خیبر ایجنسی کے تحصیل لنڈی کوتل میں سو سالہ جائیداد کا دیرینہ تنازعہ جرگے کی کو ششوں سے حل ہو گیا ۔

لنڈی کوتل کے علاقہ خیبر سلطان خیل ملک عبدالحلیم اور ملک عبداللہ خان کے خاندان اور ولی خیل گل ولی شیخان خاندان کے مابین میں جائیداد کے سو سالہ پرانے تنازعہ کو حل کرنے کے لئے سینیٹر تاج محمد آفریدی ، ان کے نمائندوں ولی محمد ، ملکزادہ ندیم ،مستقل خان، لاج بر عرف بابو حاجی اور نعمت شیر نے مڑ واک کے تحت فیصلہ کرتے ہوئے فریق اول کی جائیداد ولی خیل گل ولی شیخان کے حوالے کر دی جس پر دونوں فریقین نے رضامندی کا اظہار کر کے فیصلے پر خوشی کا اظہار کیا اور گلے مل گئے۔

جرگہ کی اس بڑی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر تاج محمد آفریدی نے کہا کہ اگر قبائلی عوام اپنی مثبت روایات اور جرگوں کو مؤثر بنائے تو بڑے بڑے تنازعات پرامن طریقے سے حل کر کے اپنی آنے والی نسلوں کو بہترین مستقبل دے سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ تنازعات کے حل میں کسی کی طرف داری نہیں کر سکتے اور ساری قوم کو ایک ہی نظر سے دیکھ کر بلا تفریق خدمت کرینگے ۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button