خیبر پختونخواقبائلی اضلاع

پختونخوا اور فاٹا میں آج سے پولیو مہم کا آغاز

خیبر پختونخوا اور قبائلی علاقہ جات میں آج سے چارروزہ پولیو مہم کے تحت 63 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے ویکسئین پلائی جائے گی ۔خیبر پختونخوا کے ضلع صوابی کے علاوہ 24 اضلاع  جبکہ تمام قبائلی علاقہ جات میں یہ مہم چلائی جائے گی ۔ محکمہ صحت کے اعداد و شمار کے مطابق صوابی میں اکیس مارچ سے پولیو مہم چلائی جائے گی اور چترال کے دس یونین کونسلوں میں شدید برف باری کے باعث رواں ماہ کے آخر میں پولیو ویکسئین بچوں کو دی جائے گی ۔ پولیو مہم 14 سے17 مارچ تک فاٹا اور ایف آرز میں بھی جاری رہے گی جبکہ پو لیو سے زیا دہ مْتا ثرہ اور حساس علاقوں یعنی خیبر ایجنسی ( میں باڑہ اور جمرود)، بنوں (میں باکاخیل ، جانی خیل، ہندی خیل اور تینٹانگہ)، شمالی اور جنوبی وزیرستان میں 7 دنوں تک انسداد پولیومہم چلائی جائے گی۔پولیٹیکل ایجنٹس ، کمشنرز ، نیم فوجی اور فوجی دستے بھی انسداد پولیو کیمپین کے علاقوں میں سیکورٹی فراہم کرنے میں مدد دیں گی۔ ٓاس مہم  میں فاٹا کے پانچ سال سے کم عمر کے980353  بچوں کو پولیو کے قطرے پلوا ئے جائنگے۔ خیبر پختونخوا میں پولیو مہم کیلئے آٹھ ہزار سے زائد جبکہ قبائلی علاقوں میں 3698 ٹیمیں پولیو کے قطرے پلوانے کا کام سرانجام دیں گے، جن میں 3333 موبائل، 276 فکسڈ اور 89 ٹرانزٹ ٹیمیں فا ٹا اور ایف آر ز کے مختلف علاقوں میں بچوں کوویکسین دیں گی۔ فاٹا میں اس سال میں ہونے والی پولیو کیمپینزمیں کل حدف کے 97% بچوں کو قطرے پلوانے میں کامیابی ملی جبکے انکا ر کی وجہ سے رہ جا نے والے بچوں کی شرح 1% سے کم رہی ہے پشاور میں انکاری والدین کی تعداد بیس ہزار سے کم ہوکر پانچ سو تک آگئی ہے ۔ فاٹا میں 2016 کے دوران ابھی تک کوئی پولیوکیس رپورٹ نہیں ہوا جبکے 2015 کے دوران فاٹا اور ایف آرز میں صرف 16 پولیو کے کیسز رپورٹ ہوئے تھے جسمیں سے شمالی وزیرستان سے ایک،جنوبی وزیرستان سے دوایف آر پشاور سے دو جبکہ خیبر ایجنسی سے کل گیارا پولیو کیسز رپورٹ ہوئے ۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button