قبائلی اضلاع

ایف ڈی اے اہلکاروں کی عدم بازیابی پر سلیمان خیل کے بائیس عمائدین گرفتار

جنوبی وزیرستان میں ایف ڈی اے کے آٹھ اہلکاروں کے اغوا کئے جانے کے بعد فرنٹئیر کرائم ریگولیشن میں علاقائی زمہ داری کے تحت سلیمان خیل قوم کے بائیس عمائدین کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے۔ پولیٹیکل انتطامیہ کے مطابق گزشتہ روز نائب پولیٹیکل ایجنٹ سعد قیصرانی نے سلیمان خیل قبیلے کو اغوا کئے گئے سرکاری اہلکاروں کی بازیابی کے لئے دو دن کی مہلت دی گئی تھی۔ دوسری جانب پختونخوا کے نئے تعینات شدہ گورنر انجنئیر اقبال ظفر جھگڑا نے بھی اغواکاری کے اس واقعے کا نوٹس لیتے پولیٹیکل انتظامیہ اور متعلقہ سیکورٹی اہلکاروں پر زور دیا ہے کہ ایف ڈی اے اہلکاروں کی بازیابی کے لئے کوششیں تیز کرے۔

خیال رہے کہ فاٹا ڈویلپمنٹ اتھارٹی کہ ان آٹھ اہلکاروں کو  جن میں پروجیکٹ ڈائریکٹر بھی شامل ہیں، دو دن قبل وانا کے علاقے توئی خلہ سے اس وقت اغوا کیا گیا تھا جب یہ عملہ چھوٹے ڈیموں کی تعمیراتی کام کا جائزہ لینے کے لئے جارہے تھے۔ ایف ڈی اے کے اغوا اہلکاروں کی زمہ داری ابھی تک کسی گروپ یا تنظیم نے قبول نہیں کی ہے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button