قبائلی اضلاع

ایک تو اقلیت اوپر سے بے گھر، باڑہ بازار کی سکھ تاجربرادری کا حکومت سے امداد کی اپیل

خیبرایجنسی کی بے گھر سکھ تاجر برادری نے باڑہ بازار میں کاروباری کاوشوں کی مد میں حکومت سے مالی اعانت کی اپیل کی ہے۔ سکھ برادری کے مطابق ان کے چھ سو کے قریب کاسمیٹیکس، پنساری، اور اشیائے خورد و نوش کی دوکانیں تھیں جس کے ساتھ پندرہ سو سکھ گھرانوں کے چولہے جلتے تھیں جبکہ باڑہ بازار بند ہونے سے ان کا یہ روزگار متاثر ہوا ہے جس کا اثر ان کی زندگی پر پڑا ہے۔

ٹی این این سے باتیں کرتے ہوئے اس برادری کا کہنا تھا کہ ان کی خواہش ہے کہ وہ باڑہ بازار میں اپنا روزگار دوبارہ بحال کرے لیکن ان کے پاس مالی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے یہ حکومت سے مالی امداد کی اپیل کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ حکومت ان کو بلا سود قرضے فراہم کرے یا پھر ایسے بین الاقوامی اداروں کی حوصلہ افزائی جو کاروباری قرضے اور مشورے دیتے ہیں۔ ” ہمارا لاکھوں کا روزگار خراب ہوا ہے اور ہماری ساری دوکانیں تباہ ہوئی ہیں جس کی وجہ سے ہم سڑکوں پر آگئے ہیں۔ ہمارے ساتھ نقد مالی اعانت کی جائے کیونکہ ہمارا سارا روزگار ڈوب چکا ہے۔ دوکان کا کرایہ ہے نہ بچوں کی سکول فیس ۔ دربدر پھرتے ہیں اور اب تو باڑہ بازار میں دوکانوں کا کرایہ بھی بڑھ گیا ہے اور دوکانیں بھی ویران پڑی ہیں “۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button