قبائلی اضلاع

فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کیا جائے : کرم سیاسی اتحاد

کرم ایجنسی کے سیاسی اتحاد نے قبائلی علاقوں کو خیبرپختونخوا میں شامل کرنے کی غرض سے ایک جلسے کا انعقاد کیا گیا۔ اتوار کو پاڑہ چنار کے شلوزان ہاؤس میں ہونے والے اس جلسے میں بڑے پیمانے پر مختلف سیاسی پارٹیوں کے رہنماؤں، قبائلی عمائدین اور عوام کی بھاری تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر عمائدین کا جلسے سے خطاب کے دوران کہنا تھا کہ قبائلی عوام ایف سی ار میں ترامیم نہیں بلکے اس کا مکمل طور خاتمہ چاہتے ہیں۔ ان عمائدین کا یہ بھی کہنا تھا کہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ فاٹا کو فوری طور پر خیبرپختونخوا میں شامل کرے کیونکہ قبائلی عوام کو مشکلات کا سامنا ہے۔

کچھ عمائدین کا کہنا تھا کہ ” ایف سی ترامیم کے قابل نہیں، یہ تو انگریزوں نے بغاوت کو دبانے کے لئے بنایا تھا اور ہم اسے بلکل نہیں چاہتے۔ ہمارا بس ایک ہی مطالبہ ہے کہ فاٹا کو خیبرپختونخوا میں شامل کیا جائے۔ حکومت کی بنائی گئی اصلاحاتی کمیٹی کو چاہئے کہ وہ یہاں ائے تو کھلے میدان میں عوام کے ساتھ مشاورت کرے”

خیال رہے کہ فروری کی پندرہ، سولہ اور سترہ تاریخ کو فاٹا سیاسی اتحاد کی جانب سے پشاور پریس کلب کے سامنے دھرنا دیا گیا جس میں تمام سیاسی پارٹیوں کے رہنماؤں نے حکومت سے مطالبہ کیا تھا کہ قبائلی علاقوں کو خیبرپختونخوا میں شامل کیا جائے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button