قبائلی اضلاع

باجوڑ میں مقامی جرگے نے دیرینہ دشمنی دوستی میں بدل دی

باجوڑ ایجنسی کے سلارزئی قبیلے کے عمائدین نے جرگے کے زریعے دو گروہوں کے درمیان دیرینہ دشمنی کو دوستی میں بدل دیا۔ مقامی لوگوں کے مطابق حضرت حسین اور گل زمان خان کے خااندانوں کے بیچ پچھلے کئی سال سے دیرینہ دشمنی چلی ارہی تھی جس میں دونوں جانب قتل بھی ہوچکے تھیں۔ ہفتے کو سلارزئ قبیلے کے عمائدین نے جرگہ بٹھا کر اس دیرینہ دشمنی کو دوستی میں بدل دیا اور دوںوں خاندانوں کے اختیار کل رکھنے والے بزرگوں کو گلے ملا لیا۔

ٹی این این سے باتیں کرتے ہوئے عمائدین کا کہنا تھا کہ مقامی دشمنیوں کی وجہ سے امن کو نقصان پہنچتا ہے اور ان کی کوشش پوتی ہے کہ جرگے کے زریعے اس طرح کی تمام دشمنیاں ختم کرکے علاقے کو امن کا گہوارہ بنادے “ جرگہ ہمارا صدیوں پرانہ نظام ہے جس کے زریعے ہم انصاف کے تسلسل کو پروان چڑھاتے ہیں اور اپس کی دشمنیاں بڑھنے کی بجائی اسے جرگے کے زریعے ختم کردیتے ہیں۔ دشمنی ایک یا دو بندوں کی غلطی ہوتی ہے جس کی سزا سارے خاندان کو ملتی ہے لہذہ ایسے مسائل کا خاتمہ ہونا چاہئے تھا کہ ہمارا امن برباد نہ ہو “

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button