قبائلی اضلاع

مہمند ایجنسی : شدت پسندوں کے حملوں میں سات خاصہ دار جاں بحق

قبائلی علاقے مہمند ایجنسی میں شدت پسندوں کے حملوں میں سات خاصہ دار جاں بحق ہوئے ہیں۔ پولیٹیکل انتظامیہ کے مطابق گزشتہ شب شدت نے پہلا حملہ یکہ غونڈ تحصیل کے علاقہ دروازگئ میں ٹیوب ویل ڈیوٹی پر مامور خاصہ پر کیا جس کے دوران فائرنگ سے دو اہلکاروں کی موت واقع ہوئی۔ اس حملے کے بعد مسلح شدت پسندوں نے ویٹرنری ہسپتال کی عمارت کو بارودی مواد نصب کرکے جُزوی نقصان بھی پہنچایا۔

انتظامیہ کا مزید کہنا ہے کہ حادثے کے کچھ دیر کڑپہ چیک پوسٹ پر بھی نامعلوم شدت پسندوں کی جانب سے حملہ کیا گیا اور فائرنگ کرکے پانچ خاصہ داروں ماردیا۔ ان واقعات کے بعد سیکورٹی فورسز نے سیرچ اپریشن شروع کیا ہے جو کہ تاحال جاری ہے جبکہ ابھی تک کسی گرفتاری کی اطلاع نہیں ملی ۔

دوسری جانب مہمند ایجنسی سے متصل چارسدہ کے شبقدر تحصیل میں نامعلوم افراد نے ایک پرائمری سکول کو بارودی مواد سے اُڑادیا ہے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button