قبائلی اضلاع

سکولوں کی بندش پر ایف آر بنوں کے قبائل کا گرینڈ جرگہ

ایف آر بنوں کے احمدزئی اور اتمانزئی وزیر قبائل کے عمائدین نے سکولوں کی بندش کے کلاف گزشتہ روز بنوں ٹاؤن شپ میں گرینڈ جرگہ بلایا۔

اس موقع پر ان قبائلی عمائدین کا کہنا تھا کہ احمدزئی اور اتمانزئی قبیلوں کے عمائدین اس وقت تک انتظامیہ کے ملاقاتوں سے بائیکاٹ جاری رکھینگے جب تک کہ فاٹا سیکرٹریٹ کی جانب سے کم تعداد ہونے کی وجہ سے سکولوں کی بندش کا فیصلہ واپس نہ لیا جائے۔  جرگے میں شریک عمائدین نے اس بارے ٹی این این کو بتایا کہ انتظامیہ کے ملاقاتوں سے ہمارے بائیکاٹ کا فیصلہ اس وقت تک قائم رہے گا جب تک یہ سکول دوبارہ کھولے نہیں جاتے اور اگر یہ سکول اور بند ہسپتال نہ کھولے گئے تو ہم سراپا احتجاج ہونگے اور احتجاجوں کا یہ سلسلہ فیصلہ موخر ہونے تک جاری رہے گا۔

دوسری جانب فاٹا سیکرٹریٹ کا موقف ہے کہ اساتذہ، ڈاکٹرز اور فنڈز کی کمی کے باعث یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ لڑکوں کے وہ سکول جس میں طلبا کی تعداد ساٹھ سے کم ہے  جب کہ لڑکیوں کے وہ سکول جس میں  طالبات کی تعداد تیس سے کم ہے بند کئے جائینگے۔ اسی طرح قبائلی علاقوں میں غیر فعال طبی مراکز بھی فاٹا سیکرٹریٹ کی جانب سے بند کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button