قبائلی اضلاع

کرم ایجنسی کے دڑادڑ پہاڑوں میں موجود معدنیات سے متعلق معاہدے پردستخط

کرم ایجنسی کے دڑادڑ پہاڑوں میں موجود معدنیات نکالنے سے متعلق دیرینہ چپقلش اپنے اختتام کو پہنچی۔ اس بارے پولیٹیکل انتظامیہ نے مقامی قبائل اور ٹھیکیداروں کے بیچ معاہدہ پر دستخط کروادئے ہیں۔ معاہدے کی رو سے ٹھیکیداران سولہ سو روپے فی ٹرک کے حساب سے علاقے کا محصول ادا کرینگے جب کہ معدنیات نکالنے کے لئے مزدور اور ٹرانسپورٹ بھی مقامی علاقے کا استعمال کیا جائے گا۔

ٹھیکیداروں کے ساتھ معاہدے میں مقامی لوگوں کے لئے ویلفئیر ڈسپنسری کی تعمیر بھی شامل ہے جو کہ مفت طبی سہولیات فراہم کرے گی۔ اس معاہدے پر کچھ عمائدین نے تو دستخط کردئے تھے لیکن کچھ ابھی راضی ہوئے ہیں اور معاہدے پر دستخط ہونے پر علاقے میں بڑی تقریب کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں علاقے کے لذیز کھانے کھلائے گئے اور ڈھول کی تاپ پر جوانوں نے رقص کیا۔ علاقے کے مکینوں نے اس بارے ٹی این این کو بتایا کہ حکومت ان کے لئے اور ترقیاتی کام بھی یقنینی بنائے ” ہمارے پہاڑوں میں سوپ سٹون سمیت کئی قسم کے معدنی ذخائر پوشیدہ ہیں جس کا کسی کو پتہ ہی نہیں، حکومت کو چاہئے کہ ان معدنیات کے بدلے ہماری خراب سڑکیں، گلی محلیں، پل اور سکول تعمیر کئے جائیں”َ

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button