قبائلی اضلاع

کرم میں پہاڑوں سے معدنیات کا تنازعہ حل ہوگیا

کرم ایجنسی (ٹی این این)پولیٹیکل انتظامیہ نے کامیاب جرگہ کے بعد پہاڑوں سے معدنیات نکالنے کا سالوں پرانا تنازعہ حل کرادیا ۔ جرگے میں پولیٹیکل حکام نے قبائل اور کنٹریکٹرز کے مابین معدنیات نکالنے کا معاہدہ تحریرکرلیا۔
کرم ایجنسی کے علاقہ دڑادڑ میں پہاڑوں سے معدنیات نکالنے کے طریقہ کارپر قبائل کے مابین سالوں سے تنازعہ چلا آرہا تھا جسے گزشتہ پولیٹیکل ایجنٹ کرم ایجنسی امجد علی خان کی کوششوں سے قبائلی عمائدین اور کنٹریکٹرز کے مابین پہاڑوں سے معدنیات نکالنے کا تحریری معاہدہ طے پایا جس پر کنٹریکٹرز اورعلاقے کے تمام قبائلی عمائدین نے دستخط کئے۔
تحریری معاہدے کے مطابق دڑادڑ کے پہاڑوں سے کنٹریکٹرز فی ٹرک سولہ سو روپے ادا کریگا ۔ مزدور اور ٹرانسٹورٹ مقامی قبائل ہونگے ، عوام کی فلاح و بہبود کے لئے کنٹریکٹرز علاقے میں ڈسپنسری قائم کرکے عوام کا مفت صحت کی سہولت اور ادویات فراہم کرینگے ۔ معاہدے کے بعد علاقے میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔
مقامی لوگوں نے خوشی کے اس موقع پرڈھول کی تھاپ پر رقص کیا اور دنبے ذبح کئے ۔ اس موقع پر سیدا جان، عمران خان، قادر خان اور دیگر قبائل رہنماوں نے کہا کہ اس معاہدے کے بعد پہاڑوں سے سوپ سٹون اور دیگر معدنیات نکالنے کا کام شروع ہوجائے گا اور کرم ایجنسی کے پسماندہ پہاڑی علاقے ترقی کی راہ پر گامزن ہوجائے گا۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button