قبائلی اضلاع

کرم ایجنسی: 512 قسم کے معدنیات موجود لیکن فائدہ کسی کو نہیں، مسائل حل کرنے کیلئے جرگے کا انعقاد

کرم ایجنسی میں معدنی ذخائر کی دریافت اور اسے نکالنے کی راہ ميں درپیش مسائل کے حل کیلۓ گرینڈ جرگہ منعقد ہوا جس ميں اہم فیصلے کئے گئے ۔
mineral jirga Kuram
کرم ایجنسی کے علاقہ وسطی کرم کا پہاڑی سلسلہ ماربل اور سوپ سٹون سمیت قدرتی خزانوں سے مالا مال ہے۔  مگر ان ذخائر پر قبائل کے مابین  اختلافات کی وجہ سے اب تک کسی قسم کا فائدہ نہیں اٹھایا گيا۔ ٹھیکیداروں اور مختلف قبائلی عمائدین کے مابین گرینڈ جرگہ منعقد ہوا جس ميں پاڑہ چمکنی اور لیسیانی قبائل کے مختلف قبیلوں کے عمائدین نے شرکت کی ۔ جرگہ سے خطاب کرتے ہوۓ پولیٹکل ایجنٹ کرم ایجنسی امجد علی خان اور ایم این اے ساجد طوری نے کہا کہ کرم ایجنسی کے پہاڑی سلسلے معدنیات سے بھرے پڑے ہیں مگر ذاتی مفادات کی وجہ سے بعض لوگ ان ذخائر سے فائدہ اٹھانے کی راہ میں روڑے اٹکا رہے ہيں اگر ان ذخائر سے فائدہ اٹھایا گيا تو کرم ایجنسی کی تقدیر بدل جاۓ گی ۔
جرگے میں ہونے والے معاہدے کے تحت ٹھیکیداران متعلقہ علاقے میں ایک ڈسپنسری بھی تعمیر کرینگے جبکہ بعض عمائدین نے اس معاہدے پر دستخط کرنے سے انکار کیا ہے۔
پولیٹیکل ایجنٹ کاکہنا تھا کہ قبائلی عمائدین اور ٹھیکیداروں کے مابین باقاعدہ معاہدہ تحریر کیا جارہا ہے جس ميں ٹھیکیداروں کو فی ٹرک کے حساب سے سولہ سو روپے کمیونٹی کو دینے کی تجویز رکھی گئی ہے اس سے قبل پانچ سو روپے فی ٹرک دئے جارہے تھے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوۓ قبائلی عمائدین نے پولیٹکل ایجنٹ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ان کی کوششوں سے قبائل کا یہ دیرینہ اور اہم مسلہ جلد حل ہوجاۓ گا ۔  ٹھیکیداروں نکے مطابق اس وقت کرم ایجنسی میں  512 قسم کے معدنیات موجود ہيں ۔
Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button