قبائلی اضلاع

آئے روز باڑہ بازار کھولنے کے اعلانات،عدم سہولیات ومالی معاونت کے کیسے روزگار شروع کرے: تاجران

خیبر ایجنسی سے سلیم آفریدی

یبرکو خیبر ایجنسی پولیٹیکل انتطامیہ نے 5 فروری سے باڑہ بازار کو کاروبار کے لئے کھولنے کا اعلان کیا ہے ۔ یکم ستمبر 2009 سے بند باڑہ بازار کو دوبارہ کھولنے کا اعلان گزشتہ ماہ گورنر خیبر پختونخواء نے باڑہ دورے کے موقع پر کیا تھا جب کہ اس اقدام کو عملی جامہ پہنانے کے لئے پولیٹیکل انتظامیہ نے  باڑہ بازار کو مرحلہ وارکھولنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

 پولیٹیکل ایجنٹ خیبر شہاب علی شاہ نے کہا کہ باڑہ میں کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لئے مرحلہ وار ایک جامع طریقہ کار وضع کیا گیا ہے جس کے تحت پہلے فیز میں باڑہ بازار کے مینارہ مارکیٹ تک کا حصہ صبح آٹھ بجے سے شام پانچ بجے تک کھلا رہے گا جبکہ باڑہ بازار کے اردگرد کے چار مقامات قمبر آباد ،الحاج مارکیٹ ،باجرے اور شیخان پل پر انٹری گیٹ کا بھی انتظام کیا گیا ہے جہاں معمول کے مطابق سکیورٹی چیکنگ ہو گی اور انٹری گیٹس سمیت بازار کے حساس مقامات پر سی سی ٹی وی کیمرے بھی نصب کئے گئے ہیں ۔
Bazar e Bara
انہوں نے کہا کہ باڑہ بازار میں ایمر جنسی بنیاد پر 1122ریسکیو اور باڑہ تحصیل میں کنٹرول روم کے انتظام کے ساتھ ایمبولینس سروس فراہم کی گئی ہے اور اسکے علاوہ تحصیل جمرود کے تربیت یافتہ ٹریفک سکواڈ کی ٹیم کو باڑہ بازار میں باڑہ ٹریفک سکواڈ کو تربیت دینے کے لئے تعینات کیا گیا ہے جو کہ بازار کھولنے کے فوراًبعد ان کی ٹریننگ سیشن بھی شروع کرے گی ۔اس کے علاوہ ٹرانسپورٹ کے حوالے سے پولیٹیکل ایجنٹ کا کہنا تھا کہ باڑہ پشاور بس سروس کو صبح نو بجے سے پہلے آنے کی اجازت نہیں ہو گی جبکہ عارضی طور ٹرانسپورٹ اڈوں کو ٹرانسپورٹروں اور بازار کمیٹی کے ساتھ باہمی مشاورت سے قائم کیاجائے گا اور ماسٹر پلان تیار کرنے تک عارضی ٹرانسپورٹ اڈوں سے کام جلایا جائے گا ۔
شہاب علی شاہ کا کہنا تھا کہ باڑہ میں مارکیٹوں کے لئے بجلی  اور دیگر بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لئے منصوبہ بندی کی گئی ہے اور عنقریب بازار میں آبنوشی منصوبے بھی مکمل ہو جائیں گے جبکہ بازار سے منسلک مین سڑکیں بالترتیب کھولے جائیں گے اور تختہ بیک ٹو متنی مین سڑک کو بھاری ٹریفک کے لئے بہت جلد کھول دیا جائے گا۔ پولیٹیکل ایجنٹ نے ٹرانسپورٹ اڈوں اور دیگر مسائل کے بارے میں قومی مشران اور ٹرانسپوٹروں و تاجروں کو یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ وقت کے ساتھ ساتھ باڑہ بازار کو ہر ممکن سہولت فراہم کی جائے گی لیکن اس وقت مزید صبر اور استقامت کی ضرورت ہے اور ایک سال کے اند ر اندر باڑہ بازار کی سابقہ رونقیں دوبارہ بحال ہو جائنگی۔
Bara Bazar
دوسری جانب باڑہ بازار تاجران نے موقف اپنایا ہے کہ ان کا روزگار چھ سال سے بند پڑا ہے اور اب جبکہ بازار کھل بھی رہا ہے لیکن ابھی تک کسی بھی سرکاری ادارے یا شخص کی جانب سے ان کے ساتھ مالی اعانت کی یقین دہانی نہیں کی گئی اور نہ ہی ان کو بازار وہ سہولیات میسر ہیں جو کہ ان کے روزگار کو پروان چڑھائے۔ ان کے مطابق انہوں نے کئی دفعہ چھوٹے اور درمیانے درجے کے روزگار کی ترقی کے لئے کام کرنے والے سرکاری ادارے سمیڈا کو بھی درخواستیں دی ہیں لیکن تاحال کوئی خاطر خواہ جواب موصول نہیں ہوا۔
Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button