باجوڑ بار ایسوسی ایشن کی نومنتخب کابینہ کی تقریب حلف برداری کا انعقاد

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج باجوڑ میاں زاہد اللہ جان نے کہا ہے کہ باجوڑ میں عدالتی نظام کو ناکام بنانے کی کوشش کرنے والوں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے اور انشاءاللہ اس نظام کی کامیابی کیلئے کوششیں جاری رکھیں گے، ججز اور وکلاء کو باجوڑ میں درپیش مشکلات کے باوجود لوگوں کو انصاف کی فراہمی میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑیں گے، عدالتی نظام صرف جج تک محدود نہیں بلکہ وکلاء، پولیس اور پراسیکیوشن بھی اس کا حصہ ہیں اور ہم سب ملکر یہ نظام چلائیں گے، وکلاء برادری کو درپیش مشکلا ت کا احساس ہے اور انشاء اللہ وکلاء برادری کے مسائل حل کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع باجوڑ کے خار جرگہ ہال میں باجوڑ بار ایسوسی ایشن کی نومنتخب کابینہ کی تقریب حلف برداری کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج میاں ذاہد اللہ جان نے باجوڑ بار ایسوسی ایشن کے نومنتخب کابینہ سے حلف لیا۔

اس موقع پر سینئر سول جج افتخار احمد، ڈی پی او باجوڑ پیر شہاب علی شاہ، اسسٹنٹ کمشنر خار انورالحق، کے پی بار کونسل کے ممبر سید زاہد جمال، باجوڑ بار ایسوسی ایشن کے صدر محمد جاوید شاہ، جنرل سیکرٹری اور سینئر وکیل اکرام درانی ایڈوکیٹ، علاؤ الدین، نائب صدر نصیر احمد اور کابینہ کے دیگر ارکان بھی موجودتھے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر بار ایسوسی ایشن محمد جاوید شاہ اور جنرل سیکرٹری اکرام درانی ایڈوکیٹ نے وکلاء برادری کو درپیش مسائل سے ججز کو آگاہ کیا۔

محمد جاوید شاہ نے کہا کہ باجوڑ بار ایسوسی ایشن کو کافی مشکلات کا سامنا ہے، عدالتی عمارت انتہائی چھوٹی ہے جس کی وجہ سے نہ صرف وکلاء اور ججز کو مشکلات درپیش ہیں بلکہ بار کونسل کیلئے روم اور لائبریری اور سائلین کےلئے بھی سہولیات نہیں ہیں۔

انہوں نے ججز سے مطالبہ کیا کہ عدالت کیلئے جوڈیشنل کمپلکس کی تعمیر کا منصوبہ جلد شروع کیا جائے کیونکہ موجودہ عمارت عدالتی نظام کیلئے موزوں نہیں ہے۔

تقریب سے ڈی پی او پیر شہاب علی شاہ نے بھی خطاب کیا اور پولیس کی جانب سے وکلاء برادری کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button