خیبر پختونخواقومی

خیبرپختونخوا کابینہ اجلاس ‘ وفاق سے وعدے پورا کرنے کا مطالبہ

پشاور (ٹی این این)خیبر پختو نخوا کابینہ اجلاس میں وفاقی حکومت سے ایف سی صوبے کو واپس کر نے ، این ایف سی ایوارڈ کے تحت خیبر پختونخوا کو دہشت گردی کے خلاف جنگ کیلئے دی جانے والی رقم میں اضافہ کرنے اور وفاق اپنے وعدے کے مطابق ایک ہزار پولیس صوبے کو فراہم کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے ۔
خیبر پختونخوا کابینہ کا اجلاس وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کی زیر صدارت کیبنٹ روم میں منعقد ہوا۔کابینہ اجلاس میں سانحہ باچا خان یونیورسٹی میں شہید ہونے والے افراد کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کی اور ان کے لواحقین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا گیا۔
کابینہ کو بتایا گیا کہ صوبے میں دہشتگردی کے سارے واقعات کے تانے بانے افغانستان اور قبائلی علاقوں سے ملتے ہیں اس لئے وفاقی حکومت ایف سی کو ملک کے دیگر حصوں سے واپس کرکے صوبے کے حوالے کرے تاکہ اس قسم کے ہونے والے واقعات کا تدارک کیا جا سکے۔
کابینہ اجلاس میں باچا خان یونیورسٹی کے اندوہناک واقعہ کے دوران یونیورسٹی کے گارڈز، چارسدہ کے مکینوں ، پولیس اور فوجی جوانوں کے بر وقت ایکشن پر انہیں خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ علاقے کے لوگوں نے اس موقع پر جس بہادری کا مظاہرہ کیا وہ اپنی مثال آپ ہے۔
اجلاس میں وزیراعلیٰ نے پولیس کو ہدایت کی کہ وہ ایف آئی اے کے تعاون سے دہشت گردوں کے مالی سہولت کاروں کیخلاف بھی اقدامات کریں۔
کابینہ کو بتایا گیا کہ یونیورسٹی کے چار ملازمین کو 44لاکھ روپے فی کس کی بنیاد پر معاوضے کا چیک دےدیئے گئے جبکہ اسسٹنٹ پروفیسر کے لواحقین کو 1کروڑ54 لاکھ روپے اور شہید طلبا کے لواحقین کو 20لاکھ روپے دیئے جائینگے جبکہ شدید زخمیوں کےلئے4لاکھ روپے اد کئے جائینگے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button