بین الاقوامیقومی

پاکستانی کینڈئین شرمین عبید چنائے کا دوسرا آسکر ایوارڈ

شرمین عبید چنائے کو ‘بیسٹ شارٹ ڈاکو مینٹری’ کی کٹیگری میں عزت کے نام پر قتل کے حوالے سے تیار کردہ ڈاکو مینٹری ‘اے گرل ان دی ریور: دی پرائس آف فورگیونس’ پر آسکر ایوارڈ سے نوازا گیا۔

پاکستانی کنیڈئین فلمساز شرمین عبید چنائے نے ایک بار پھر انٹرٹینمنٹ کی دنیا کا سب سے بڑا ایوارڈ اپنے نام کر لیا ۔ شرمین نے اے گرل اِن دی ریور پر بہترین ڈاکیو مینٹری کا آسکر ایوارڈ جیتا ہے۔  شرمین عبید چنائے نے اپنی والدہ کے ساتھ ریڈ کارپٹ کی رونق بڑھائی ۔ 88 ویں آسکر ایوارڈز کی رنگارنگ تقریب امریکی شہر لاس انجلس میں منعقد کی گئی۔

شرمین عبید چنائے نے پاکستان کی شان بڑھائی اور ایک بار پھر فلمی دنیا کا سب سے بڑا ایوارڈ اپنے دیس لائیں ۔ اے گرل ان دی ریور  شرمین عبید چنائے فلمز اور ہوم باکس آفس (ایچ بی او) کی مشترکہ پروڈکشن تھی جس میں ایک اٹھارہ سالہ لڑکی کی زندگی کا احوال بیان کیا گیا تھا جو عزت کے نام پر قتل کی کوشش میں بچ جاتی ہے ۔

شرمین کی فلم اے گرل اِن دی ریور کو بہترین ڈاکیو مینٹری کا آسکر ایوارڈ ملا ، ایوارڈ وصول کرتے شرمین عبید کا کہنا تھا کہ پاکستانی وزیر اعظم نے غیرت کے نام پر قتل کے قانون میں میں تبدیلی کا وعدہ کیا ہے ۔

شرمین نے دوسری بار یہ ایوارڈ اپنے نام کیا ہے اس سے پہلے انہوں نے دو ہزار بارہ میں سیونگ فیس پر آسکر ایوارڈ جیتا تھا ۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button