قومی

افغان امن عمل کے لئے طالبان سے مذاکرات ناگزیر ہے : سرتاج عزیز

وزیراعظم کےمشیربرائےخارجہ امورسرتاج عزیزنےکہا ہے کہ افغانستان میں امن کی بحالی کے لئے مذاکرات ناگزیر ہیں۔

پیر کو اسلام آباد میں افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات کی راہ ہموار کرنے سے متعلق چار ملکی نمائندہ وفد سے خطاب کرتے ہوئے سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ مزاکراتی عمل کے ابتدا میں ہر قسم کے شرائط سے کنارہ کشی اختیار کرنی چاہئے کیونکہ اس سے امن کے لئے ہونے والی کوششوں پر برا اثر پڑے گا۔

۔سرتاج عزیز کے مطابق افغانستان میں مذاکراتی عمل کی دوبارہ شروعات کے لئے ایک ہی طریقہ ہے اور وہ ہمارے اس اجلاس کا مقصد بھی ہے کہ افغان طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانا ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ ماہ پاکستان اور افغانستان کی اعلٰی قیادت اس بات پر متفق ہوئے ہیں کہ طالبان کے سات مذاکراتی عمل دوبارہ شروع کیا جائے جس میں چین اور امریکہ بھی حصہ لے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ مری میں افغان طالبان اور افغان حکومت کے مابین ہونے والے امن مذاکرات طالبان کمانڈر ملا عمر کے موت کی خبر کے ساتھ تعطل کا شکار ہوگئے تھے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button