قومی

حکومت اور دواساز کمپنیوں کے مذاکرات ناکام

سیکرٹری صحت سائرہ افضل تارڑ دوا ساز کمپنیوں کے نمائندوں کا انتظار کرتی رہیں ، صرف ایک کمپنی کا نمائندہ مذاکرات کیلئے آیا۔

 ادويات کی قیمتیں بڑھانے کے معاملہ پر حکومت دوا ساز کمپنیوں کا انتظار کرتی رہی ۔ وزیر مملکت سائرہ افضل تارڑ کہتی ہیں کہ کچھ ملٹی نیشنل کمپنیوں نے غلط بیانی کرکے حکم امتناعی لیا اور قیمتیں بڑھائیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ  اپوزیشن معاملہ پر سیاست نہ کرے ۔

حکومت اور دوا ساز کمپنیوں میں قیمتوں کے حوالہ سے مذاکرات نہ ہوسکے ۔ وزیر مملکت سائرہ افضل تارڑ ، ڈی جی اور سیکرٹری صحت پر مشتمل ٹیم دواساز کمپنیوں کا انتظار ہی کرتی رہی ۔ گیارہ میں سے صرف ایک کمپنی کا نمائندہ مذاکرات کے لیے آیا مذاکرات صبح دس بجے شروع ہونا تھے تاہم حکومتی ٹیم کئی گھنٹہ تک انتظار کرتی رہی ، وزیر مملکت نے بعد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ادويہ ساز کمپنيوں کو بلايا تھا مگر وہ نہيں آئے ، اپوزیشن پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اپوزيشن عوامی معاملے پر پوائنٹ سکورنگ بند کرے ، اپوزيشن اجازت کے بغير ادويات کی قيمتوں ميں اضافہ کرنے والوں کی حمايت کر رہی ہے ، حکومت ادويات کي قيمت کم کرنے جبکہ اپوزيشن فارما کمپنیوں کی حمایت کر رہی ہے ، کچھ ملٹی نيشنل کمپنيوں نے عدالت کو غلط بيانی کرکے حکم امتناعی کی آڑ ميں قيمتوں ميں من مانا اضافہ کيا ، حکومت عوام کے ساتھ ايسی زيادتی کسی صورت برداشت نہيں کرے گی ۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button