قومی

خیبر پختونخوا میں کسی ادارے کی نجکاری نہیں ہورہی‘ عمران خان

پشاور(ٹی این این) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہاہے کہ لازمی سروس ایکٹ کانفاذ صوبائی حکومت کانہیں بلکہ عدلیہ کے حکم کی تکمیل کی جارہی ہے ۔ اپنی حکومت کو واضح کرتاہوں کہ جوڈاکٹرہڑتال پرجائے عدلیہ کے فیصلے کااحترام کرتے ہوئے اسے گھربھیج دیاجائے۔
خیبرپختونخوا حکومت ہسپتالوں کو پرائیویٹ نہیں کررہی بلکہ وفاقی حکومت پی آئی اے کواونے پونے داموں میں فروخت کرنے جارہی ہے ۔ پانچ فیصد ڈاکٹروں کو ہسپتالوں کی اصلاحات میں رکاؤٹ بننے نہیں دیا جائیگا۔
پشاورمیں میڈیاکوبریفنگ دیتے ہوئے عمران خان نے کہاکہ پی آئی اے کی نجکاری اور خیبرپختونخواکے ہسپتالوں میں اصلاحات کو ایک کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ، صوبے میں کسی ہسپتال کی نجکاری نہیں کی جارہی بلکہ سسٹم کو فعال بنارہے ہیں ۔ پی آئی اے کے ملازمین کااحتجاج اصولوں پر مبنی ہے کیونکہ وفاقی حکومت پی آئی اے کو اونے پونے داموں بیچنے جارہی ہے اور اس حوالے سے انہوں نے ملازمین کو اعتماد میں لیا نہ ہی پارلیمنٹ کو۔
خیبرپختونخوامیں ہسپتالوں میں اصلاحات کے حوالے سے اسمبلی میں ایکٹ پاس کرواچکے ہیں جبکہ ہائیکورٹ نے بھی اس ایکٹ کو نافذ کرنیکی ہدایات جاری کی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ امیرمقام نے ہسپتال میں احتجاجی مظاہرے میں جاکر توہین عدالت کی ہے ۔ صوبائی حکومت ان کے خلاف ایف آئی آردرج کرائے ۔
ان کا کہناتھاکہ بورڈ آف گورنرکے قیام سے ادارے مضبوط ہونگے ‘ کالجوں کی نجکاری کے حوالے سے شوشہ چھوڑاجارہاہے ‘ صوبے میں کوئی ادارہ پرائیویٹائزنہیں کررہے بلکہ خودمختارکیاجارہاہے ۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button