خیبر پختونخوا

21 ویں صدی، صحافی پریس کلب سے محروم، سیاسی دعوےدھرے رہ گئے

خیبرپختونخوا کے چھبیس اضلاع میں ایک ضلع بٹگرام ایسا بھی ہے جسمیں ابھی تک صحافی برادری کے لئے ایک پریس کلب کا قیام ممکن نہ ہوسکا۔اکیسویں صدی میں جہاں انسان چاند پر چلا گیا ہے اور مریخ پر نوآبادیاتی نظام کے بارے میں سوچ رہا ہے، دنیا تکنیکی دور کے انتہا سے گزر رہی ہے وہاں بٹگرام جیسے ضلع میں ابھی تک قوم کے مسائل کو ارباب بست کشاد کے  کانوں تک پہنچانے والی صحافی برادری کے لئے ایک چت میسر نہیں جہاں وہ سر جوڑ کر بیٹھ سکیں اور علاقے کے مسائل کو قلم کی زبان میں دنیا کے سامنے بیان کر سکے۔

ٹی این این سے بات کرتے ہوئے علاقے کے صحافیوں کا کہنا تھا فی الحال ایک سرکاری عمارت کو پریس کلب کے طور پر استعمال کیا جارہا ہے جس کا کرایہ بھی صحافی اپنے جیب سے ہی ادا کرتے ہیں۔ان صحافیوں کا حکومت سے فوری طورپر پریس کلب کی تعمیر اور انکے لئے مالی گرانٹ کی منظوری کا مطالبہ کیا ہے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button