خیبر پختونخوا

لیڈی ریڈنگ ہسپتال ڈاکٹرز کا تیسرے روز بھی ڈیوٹی سے بائکاٹ

 

صوبے کے بڑے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں ڈاکٹروں نے تیسرے روز بھی ڈیوٹی سے بائکاٹ کیا ہے جسکی وجہ سے مریضوں کے ساتھ آئے لوگوں نے ایک مرتبہ پھر احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔ گزشتہ روز کی طرح آج بھی ہسپتال کے سامنے مظاہرین نے صوبائی حکومت اور ڈاکٹروں کے خلاف نعرے لگائیں۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ ڈاکٹروں کے آئے روز ہڑتالوں سے عوام تنگ آگئے ہیں اور مریض بہت تکلیف سے گزر رہے ہیں ” ہم دیر کے تورمنگ علاقے سے آئے ہیں اور آج ہمارا تیسرا دن ہے اس بچے کو لے کے آئے ہیں ڈاکٹر نہیں ہے اور اسکی حالت خطرناک ہے“۔ “میرے بھائی کی ٹانگ ٹوٹی ہے ابھی تک کوئی ڈاکٹر بھی نہیں آیا غریب بندے کی اتنی اوقات کہاں کہ کسی پرائیویٹ کلینک چلا جائے ہم بہت مشکل میں ہیں۔ خیال رہے کہ کچھ دن قبل ہاسٹل کے تنازعے پر پیرامیڈیکل سٹاف اور ڈاکٹروں کے درمیاں ہاتھا پائی ہوئی تھی جس کے نتیجے میں ڈاکٹروں نے ایمرجنسے کے علاوہ دیگر سروسز سے بائکاٹ کیا ہے۔ آج شام ہیلتھ سیکرٹری  سے کامیاب مزاکرات کے بعد ڈاکٹروں نے اپنا بائکاٹ ختم کیا ہے جبکہ ڈاکٹروں کو ایک ہفتے کے اندر اندرانکے ہاسٹل کے مسئلے کو حل کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button