خیبر پختونخوا

پختونخوا حکومت نے سی پیک سے متعلق معاہدہ عام کردیا

خیبرپختونخوا حکومت نے پاک چین اقتصادی راہداری منصوے بارے مرکزی حکومت سے کیا گیا معاہدہ عام کردیا ہے۔ اس معاہدے کی رو سے چھیالیس ارب ڈالر کے اس منصوبے میں خیبرپختونخوا سے گزرنے والی مغربی روٹ کا افتتاح آٹھ جولائی کو کیا جائے گا جو کہ ڈھائی سال کے عرصے میں پایہ تکمیل کو پہنچایا جائے گا۔ اس روٹ میں بٹگرام، مانسہرہ، ہری پور، کرنل شیر خان کلے، ملاکنڈ چکدرہ انٹچینج، سوات، بنوں اور ڈیرہ اسماعیل خان میں آٹھ صنعتی پارکوں کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔

پندرہ فروری کو صوبائی اور وفاقی حکومتون کے درمیان ہونے والے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ صنعتی زونز کے لئے زمین صوبائی حکومت حاصل کرے گی جس پر فوری طور پر پلاننگ کمیشن ریلوے ٹریک، فائبر اپٹکس، بجلی، گیس اور ٹیلیفون لائن سمیت سمیت دیگر لوازمات کی تنصیب کا کام شروع کرے گی۔ اسکے علاوہ ڈی آئی خان، نوشہرہ، مردان اور چارسدہ تک ریلوے لائن بچانا اور ڈی آئی خان سے پشاور اور کرک سے کوہاٹ کے راستے ٹیکسلا تک موٹرویز کی تعمیر بھی اسی منصوبے کا حصہ گردانا گیا ہے۔

گزشتہ روز ویزراعلٰی خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے وفاقی وزیراحسن اقبال کو خط لکھا ہے جس میں مطالبہ کیا گیا ہے خط کے جواب میں اس منصوبے سے متعلق غلط فہمیاں دور کرے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button