خیبر پختونخوا

کپتان بادشاہ بن گیا ‘ علاقے میں جشن کا سماں

چترال(گل حماد فاروقی) وادی کیلاش اور شیخاندہ میں برفانی ہاکی ٹورنامنٹ کے اختتام پر فائنل ٹرافی جیتنے والی ٹیم کے کپتان عبدالجمیل کو تین دن کیلئے مہتر یعنی بادشاہ بنایا گیا ہے جس پر علاقے بھر کے لوگ خوشیاں منا رہے ہیں۔
اے وی ڈی پی کے منیجر وزیر زادہ کیلاش کے مطابق تباہ کن سیلاب اور خطرناک زلزلے کے بعد علاقے کے لوگوں پر نہایت منفی نفسیاتی اثرات پڑے تھے اسلئے لوگوں کو اس ڈراﺅنی خیالات سے نکالنے کیلئے نرالہ ٹورنامنٹ کا اہتمام کیا جس میں کیلاش یعنی غیر مسلم اقلیت اور شیخان یعنی مسلم دونوں فرقوں کے لوگوں کی اشتراک سے برفانی ہاکی ٹورنمنٹ شروع کروایا تاکہ یہ متاثرہ اور غمزدہ لوگ چند لمحوں کیلئے اپنے غم کو بھول جائے۔
ٹرافی جیتنے والے کپتان عبد الجمیل کو تین دن کیلئے وادی کا مہتر بادشاہ بنایا گیا ہے جنہوں نے مبارک باد دینے کیلئے آنے والے مہمانوں کیلئے بیل ذبح کیا ۔
بادشاہ بننے کی خوشی میں اس کے گھر پر ایک ثقافی شو کا بھی اہتمام ہوا جس میں نورستانی ثقافت کا بھر پور مظاہرہ کیا گیا۔ روایات کے مطابق پہلے مہتر یعنی بادشاہ نے بانسری اور مقامی ڈھولک کی تھاپ پر رقص کرکے تماشائیوں سے داد وصول کی ۔ وادی کیلاش، شیخاندہ وغیرہ میں تفریح کے مواقع نہ ہونے کے برابر ہیں یہی وجہ ہے کہ یہ لوگ خود کو خوش رکھنے کیلئے کسی نہ کسی بہانے سے ثقافتی شو کا اہتمام کرتے ہیں۔
مقامی لوگوںکا کہنا ہے کہ وادی چترال کی پر امن رہنے کی بنیادی وجہ صدیوں پرانی ثقافت کو زندہ رکھنا ہے اور لوگ اپنے ثقافت کو زندہ رکھتے ہوئے اس میں چند لمحوں کیلئے اپنے غم بھول جاتے ہیں بلکہ اس سے وہ منفی سوچ اور نقصان دہ سرگرمیوں سے بھی بچ جاتے ہیں۔ وادی کیلاش، شیخاندہ میں تین دن تک بادشاہ بننے کی خوشی میں جشن جاری رہے گا اور اس دوران مہتر مختلف سماجی کام کروانے کے ساتھ ساتھ لوگوں میں تصفیہ بھی کروائیں گے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button