خیبر پختونخوا

پشاور ہائی کورٹ کی ایف ائی اے کو ہنڈئ کے خلاف کاروائی کی اجازت

پشاور ہائی کورٹ نے وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف ائی اے کو پشاور کے چوک یادگار میں کرنسی کے مبینہ غیرقانونی کاروبار کے خلاف کاروائی کی اجازت دے دی ہے۔ چوک یادگار صرافہ بازار کے تاجران نے پشاور ہائی کورٹ میں کیس جمع کرایا تھا کہ ان کے کرنسی کا کاروبار قانونی ہے اور یہ کہ ایف ائی اے نے ان کے تین سو کے قریب دوکانیں سیل کر کررکھی ہیں جس پر عدالت نے ان کی بند دوکانیں دوبارہ کھولنے کے احکامات جاری کئے تھے۔

اس کیس کی دوسری سماعت میں ایف ائی اے نے موقف اپنایا ہے کہ اس دوکانوں میں ہنڈئ کا غیرقانونی کاروبار ہوتا ہے جس کی وجہ سے ان کے ادارے نے ان دوکانوں کو سیل کردیا تھا۔ گزشتہ روز عدالت عالیہ کی پانچ رکنی بنچ نے فیصلہ کرتے ہوئے وفاقی تحقیقاتی ادارے کو ہنڈئ کاروبار کے خلاف کاروائی کرنے کی اجازت دی ہے جبکہ کرنسی ایکسچینج والوں کو تنگ کرنے سے منع کیا ہے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

Back to top button