خیبر پختونخوا

ایچ ایم سی میں ایم ٹی آئی ایکٹ پر عمل درآمد پر اظہار اطمینان

پشاور (ٹی این این ) خیبرپختونخوا کے وزیر صحت شہرام خان ترکئی نے حیات آباد میڈیکل کمپلیکس پشاور میں صوبائی حکومت کے اصلاحاتی اقدامات پر عملدرآمد کی رفتار پراطمینان کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس طبی ادارے میںمیڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوٹس ریفامز ایکٹ کے نفاذ مثبت نتائج سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں۔ ہسپتال کی شکل وصورت اورصفائی کے ساتھ علاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی میںبھی نمایاں بہتری آئی ہے اور بہت جلدیہ ہسپتال ایک ماڈل ہسپتال کے طورپر سامنے آئے گا ۔ وہ دن دور نہیں جب صوبے کے تمام بڑے ہسپتالوں میں بھی اس طرح کی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں گی۔ وہ منگل کے روز حیات آباد میڈیکل کمپلیکس کے دورے کے موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگوں کررہے تھے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ حکومت نے شعبہ صحت اورہسپتالوں کے چھ دہائیوں سے جاری نظام کو بدلنے کا نہ صرف عزم کیاہے بلکہ اس کے لئے حقیقی معنوں میں نتیجہ خیز اقدامات بھی اٹھائے ہیں جس کے انتہائی مثبت نتائج سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں۔
ایچ ایم سی کی تمام انتظامی ،مالی اورطبی معاملات کو مکمل طورپر کمپیوٹرائزڈ کرکے اسے پیپر فری بنایا جارہا ہے جس سے ہسپتال کے روزمرہ معاملات میںمزید بہتری آئے گی۔
صوبائی وزیر کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیاکہ ہسپتال کی تین سالہ اسٹرٹیجک پلان کے حوالے سے بتایا گیا کہ اس پلان کے تحت ہسپتال میں نئے عملے کی بھرتی اور انفراسٹرکچر پر سال 2017 ءتک کل 1360 ملین روپے خرچ کئے جائیںگے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button