خیبر پختونخوا

کم عمری کی شادیوں سے متعلق پشاور میں سیمینار کا انعقاد، قانون سازی اب بھی ایک خواب

پشاور میں بچوں کی کم عمری میں شادیوں سے متعلق ایک سیمینار کا انعقاد کیا گیا جس میں صوبائی حکومت کو اس بارے قانون سازی پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

پشاور پریس کلب میں نجی ادارے بلیووینز کی جانب سے ترتیب دیا گیے اس سیمینار میں مختلف سول سوسائٹی تنظیموں، وکلا، صحافی برادری اور ماہر نفسیات نے شرکت کی۔ اس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ سندھ اور پنجاب میں کم عمری کی شادی کے سدباب کے لئے اس قانون میں ترامیم کی گئی ہیں جس کے تحت نہ صرف شادی کے لئے کم سے کم عمر سول سال سے اٹھارہ کردی گئی ہے بلکہ اس قانون کی خلاف ورزی کرنے پر عائد جرمانے میں بھی اضافہ کیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کا اس حوالے سے قانون تیار ہے لیکن منظوری اس میں رکاؤٹ ہے۔ اس سیمینارم میں بعض قانون دانوں نے خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سے پیش کئے جانے والے قانونی مسودے میں موجود مبینہ غلطیوں پر بھی تنقید کی۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button