خیبر پختونخوا

چھ مہینے گزرنے کے باوجود بلدیاتی نمائندوں کو اختیارات کی منتقلی ممکن نہ ہوسکی

بلدیاتی انتخابات میں منتخب عوامی نمائندوں نے اختیارات نہ ملنے کے خلاف صوبائی اسمبلی کے سامنے دھرنے دیا ہے۔ پشاور، نوشہرہ، مردان، چارسدہ اور کوہاٹ ویلج کونسل، نیبرہوڈ کونسل ناظمین اور دیگر کونسلروں نے اختیارات نہ ملنے پر پشاور میں صوبائی اسمبلی کے سامنے دھرنا دیا ہے۔۔ احتجاج کرنے والوں میں حزب اختلاف پارٹیوں کے علاوہ پاکستان تحریک انصاف کے ناظمین بھی شامل تھے جن کا کہنا تھا کہ انتخابات کے چھ مہینے گزرنے کے بعد بھی ان کو نہ تو اختیارات کی منتقلی کا عمل شروع ہوا ہے اور نہ ہی ان کو دفاتر دیے گئے ہیں۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ عوام کو ان سے کافی امیدیں وابسطہ ہیں لیکن یہ اب تک عوام کی کوئی خدمت نہیں کرسکے۔ دھرنے میں شامل مردان پھلو ڈھیرئ ویلج کونسل کے ناظم حاجی رحیم خان نے ٹی این این سے بات کرتے ہوئے کہا “ ہماری حکومت سے یہ درخواست ہے کہ ہمارے ساتھ بلدیاتی انتخبات کے موقع پر کئے گئے وعدے پورے کرے۔ابھی تک ہمیں فنڈ تک جاری نہیں ہوا۔ کئی ویلج کونسلوں کا انہوں نے فنڈ کم کردیا ہے۔ ان کو دیہی علاقوں پر زیادہ توجہ دینی چاہیے کیونکہ شہری علاقوں کی نسبت ان علاقوں مین ترقیاتی کاموں کی زیادہ ضرورت ہوتی ہے۔ ابھی تک ہمیں یہ پتہ نہیں کہ ہمارے اختیارات کیا ہیں اور ہماری زمہ داریاں کیا ہیں۔”

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button