خیبر پختونخوا

ڈی ایچ اے کے خلاف پشاور ہائیکورٹ میں رٹ دائر

پشاور(ٹی این این) پاکستان تحریک انصاف کے ممبر صوبائی اسمبلی خیبرپختونخوا ارباب جہانداد خان سمیت مقامی ناظمین نے مجوزہ ڈیفنس ہاﺅسنگ سکیم سائٹ 2 پشاورکی زرعی اراضی پر تعمیرات کے خلاف پشاور ہائیکورٹ میں رٹ دائر کر دی ہے۔
ایڈوکیٹ غلام محی الدین ملک کی وساطت سے درخواست گزار وں نے چیف سیکرٹری ، ڈائریکٹر لینڈ ڈی ایچ اے پشاور، سیکرٹری ہاﺅسنگ ڈیپارٹمنٹ ، سینئر ممبر ایف ایم بی آر، ڈی سی او پشاور، ڈسٹرکٹ آفیسر ریونیو، کمشنر پشاور، لینڈ ایکوزیشن کلکٹرپراونشل ہاﺅسنگ اتھارٹی اور ڈی جی پی ایچ اے کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ قوانین کے مطابق ایک شہر میں صرف ایک ڈی ایچ اے سکیم بنائی جاسکتی ہے تاہم پشاور میں ایک سیکٹر کے بعد اب مجوزہ طور پر زرعی اراضی پر دوسرا سیکٹر تعمیر کیا جارہا ہے ۔
رٹ میں کہا گیا کہ خیبرپختونخوا ریونیو ڈیپارٹمنٹ نے 12 نومبر2002 ءکو کلکٹرز کو ایک مراسلہ جاری کیا تھاجس کے مطابق ہاﺅسنگ سکیموں کے لئے ناقابل کاشت اراضی کے انتخاب کا کہا گیا تھا جبکہ صوبائی کابینہ نے مختلف ادوار میں فیصلہ کیا تھا کہ زرعی اراضی کو ہاﺅسنگ سکیم کے لئے مختص نہیں کیا جائے گا تاہم اس کے باوجود بھی مجوزہ سکیم کے لئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ مجوزہ سکیم کے منصوبے کو ختم کیا جائے۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button