بین الاقوامی

سعودی میں تعینات پاکستانی افواج کی تعداد میں اضافہ ہوگا: خواجہ آصف

پاکستان کے دفاعی وزیر خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ اس وقت 1100 سے زیادہ پاکستانی فوجی افسران اور دوسرے رینک کے اہلکار سعودی عرب میں تعینات ہیں اور ان اہلکاروں کی تعداد میں مزید اضافہ ہوگا۔ منگل کو قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِ دفاع خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ34 اسلامی ممالک کے اتحاد کے کوئی فوجی مقاصد نہیں ہیں بلکہ یہ دنیا کے اُن غیر مسلم ممالک کو جواب ہے جو مسلمانوں کو بطور شدت پسند پیش کر رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ اسلامی ممالک کے اس اتحاد کو ابھی تک کوئی مناسب نام بھی نہیں دیا گیا اور یہ اتحاد کسی بھی ملک کے خلاف نہیں بلکہ یہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے بنایا گیا ہے۔

وزیرِ دفاع نے کہا کہ پاکستان کے سعودی عرب کے ساتھ سب سے زیادہ فوجی تعاون کے معاہدے ہیں جس کے تحت دونوں ممالک کی افواج کے درمیان ہر سال پانچ مرتبہ فوجی مشقیں ہوتی ہیں۔ وزیرِ دفاع نے نے کہا کہ اس وقت 1100 سے زائد پاکستانی فوجی افسران اور دوسرے رینک کے اہلکار سعودی عرب میں تعینات ہیں اور ان اہلکاروں کی تعداد میں مزید اضافہ ہوگا۔ خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ اس اتحاد سے متعلق سعودی عرب سے مزید تفصیلات کا انتظار ہے، تاہم وفاقی حکومت کا کہنا ہے کہ اس اتحاد میں شامل مسلم ممالک سے کہا گیا ہے کہ وہ اپنے کردار سے متعلق خود فیصلہ کریں۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button