بین الاقوامی

افغان امن عمل : حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات مارچ میں ہونگے

  افغانستان میں امن مذاکرات کی بحالی کیلئے ہونے والے چار ملکی رابطہ گروپ کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ افغان طالبان اور افغان حکومت کے درمیان پہلے براہ راست مذاکرات مارچ کے پہلے ہفتے میں ہونگے، پاکستان نے مذاکرات کے پہلے دور کا اجلاس اسلام آباد میں کرانے کی پیشکش کردی۔

افغانستان میں قیام امن سے متعلق چارملکی گروپ کا چوتھا اجلاس کابل میں ہوا، جس میں چین، امریکا، افغانستان اورپاکستان کے نمائندوں نے شرکت کی، پاکستان کی جانب سے سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری شریک ہوئے۔

اجلاس میں گزشتہ اجلاسوں کے فیصلوں کے بارے میں پیش رفت کا جائزہ لیا گیا، دفتر خارجہ سے جاری مشترکا اعلامیے  کے مطابق اجلاس میں افغان صدراشرف غنی کا قیام امن کیلئے افغان طالبان گروپوں سے مذاکراتی عمل کے حوالے بیان کو سراہا گیا۔

اعلامیے کے مطابق فریقین نے افغان حکومت اور طالبان کے درمیان براہ رست مذاکرات کی حمایت کا اعلان کیا ہے، چارملکی گروپ نے تمام طالبان گروپوں کومذاکراتی عمل میں شامل ہونے کی دعوت دی ہے، چار ملکی رابطہ گروپ کا آئندہ اجلاس طالبان اور افغان حکومت کے درمیان پہلے براہ راست مذاکرات کے بعد اسلام آباد میں ہوگا۔

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button