متاٗثرین فاٹا

اورکزئی ایجنسی میں پہلی مرتبہ پریس کلب کا قیام عمل میں آیا

فاٹا میں شورش سے پہلے صرف اورکزئی ایجنسی میں پریس کلب کا وجود نہیں تھا لیکن ابھی امن قائم ہونے کے بعد پہلی مرتبہ اورکزئی کے علاقے غلجو میں پریس کلب قائم کیا گیا ہے، مقامی صحافیوں کے راہنما ء صالح دین اورکزئی اس حوالے سے کہتے ہیں ،
’ اوکزئی واحد ایجنسی تھی کہ وہاں پر پریس کلب نہیں تھا، جسکی وجہ سے صحافیوں کو اعلی حکام تک رسائی میں مشکلات تھی، اب یہاں پر پو لیٹیکل اتظامیہ کی جانب سے چالیس لاکھ روپے کی لاگت سے پریس کلب قائم کیا گیا ہے اور جب یہ پوری طرح فعال ہو جایگا تو ہم علاقے کے مسائل اچھے طریقے سے اعلی حکام تک پہنچائیں گے اور حل کرنے کی کو شش کر ینگے، اس کے علاوہ بحالی کے کاموں کو بہتر طور پر رپورٹ کریں گے۔’

Capture3
پریس کلب کی فعال ہو نے سے قابل اور پیشہ وارانہ صحافی سامنے آیءں گیاور علاقے میں امن و امان بر قرار رکھنے میں مدد ملی گی، یہاں کے صحافیوں کو چاہیے کہ وہ عارضی طور پر بے گھر ہو نے والے افراد کے مسائل پر توجہ دیں اور ان کے مسائل اعلی حکام تک پہنچانے میں اپنا کردار ادا کریں۔


یہ تحریر ریڈیو ئی این این کو پروگرام “دا منزل پہ لور” سے لی گئی ہے، جہاں پر قبائلی علاقوں کے بے گھر افراد اور ان کی بحالی کے عمل کے بارے میں معلومات فراہم کی جاتی ہیں۔ یہ پروگرام ریڈیو ئی این این کے پروڈیوسر شان محمد آفریدی اور سلمان احمد نے تیار کی ہے۔ جو فاٹا اور خیبرپختونخواہ کے پانچ ریڈیو سٹیشنز سے نشر کیجاتی ہے۔
رپوٹرز: شاہ خالد ، گل محمد مومند ، شاہ نواز آفریدی ، ملک عظمت، علی افضل ، رضوان محسود، حکمت شاہ اور نبی جان اورکزئی

Show More

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button